Posted on

السلام علیکم پیارے پیارے بچو !!!کیسے ہیں آپ سب ٹھیک ہیں خیریت سے ہیں مزے سے ہیں اپنی احادیث اچھے طریقے سے یاد کر رہے ہیں الحمدللہ میں امید کرتی ہوں کہ آپ بہت اچھے طریقے سے یاد کر رہے ہونگے تو چلیے آج ہم ایک اور حدیث پاک پڑھیں اور اس کو اپنی روز مرہ زندگی کا ایک حصہ بنائیں -آج کی حدیث کا ترجمہ دوسروں کو گالی دینا ، برے نام سے پکارنا اور دوسرے مسلمان بھائیوں کے ساتھ لڑنا  ، اسلام میں ،بہت بڑا گناہ اور کفر ہے۔ حدیث

آج ہم محمد صلی اللہ علیہ و سلم کی سیرت سے دو کہانیاں سنیں گے۔

پہلی کہانی دوسروں کو ڈانٹنے اور بُرے ناموں سے پکارنے کے بارے میں ہے

 کہانی 1

 ابوزر اور بلال رضی اللہ عنہ کاجھگڑا

ایک زمانے میں ، ہمارے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے دو ساتھی ابوذر اور حضرت بلال کا آپس میں جھگڑا ہوا تھا۔ دونوں بحث کر رہے تھے جب ابوذر نے بلال رضی اللہ عنہ کو ‘سیاہ فام عورت کے بیٹے’  ناراضگی سے کہا۔ حضرت بلال ان سے ان الفاظ کی توقع نہیں کر رہے تھے۔ یہ الفاظ بہت تکلیف دہ تھے۔ وہ ایک بہت ہی پیارے شخص اور اسلام کے پہلے موذن تھے ۔ تو یہ الفاظ انکے رونے کے لئے کافی ہیں۔ لیکن انھوں نے پلٹ کر نہیں ڈانٹا اور نہ ہی کوئی بری بات کہی۔ حضرت بلال نے اس کی شکایت حضرت محمد  سے کی۔ ہمارے پیارے نبی  غصے میں آگئے اور ابوذر سے کہا- کیا آپ ابھی بھی جہالت کے آدمی ہیں؟

 پیارے بچو ،اس دور میں آپس میں لڑائی جھگڑے اور گالم گلوچ ایک معمول کی بات تھی۔ لیکن ہمارے مذہب نے ہمیں ایسا کرنے کی اجازت نہیں دی۔ ہمارے مذہب نے ہر انسان کا درجہ بلند کیا اور ہمیں سکھایا کہ سب برابر ہیں۔ جب اس  غلطی کا احساس ہواتو

ابوذر روئےاور بلال رضی اللہ عنہ سے ملنے گئے ۔ وہ بلال رضی اللہ عنہ کے سامنے لیٹ گئے اور قسم کھا لی کہ جب تک بلال میرے چہرے پر پیر نہیں ڈالے گا وہ زمین سے اپنا سر نہیں اٹھائیں گے ۔ لیکن دوسری طرف بلال ایسا کرنے کو تیار نہیں تھے ۔ ان کا بدلہ لینے کا کوئی ارادہ نہیں تھا۔ لیکن ابوذر  نے اصرار کیا۔ لہذا اپنی قسم پوری کرنے کے لئے بلال نے ایسا ہی کیا اور پھر ان دونوں نے ایک دوسرے کو گلے لگا لیا۔ 

پیارے بچو  یہ ابوذر کا سوری کہنے کا انداز تھا۔ وہ اللہ سے ڈرتے تھے اور اللہ کو خوش کرنے کا سوچا ۔ یہ کہانی ہمیں بتاتی ہے کہ معذرت کہنا شرمناک عمل نہیں ہے۔ اس کی بجائے یہ ہماری غلطی کو مٹائے گا اور اللہ کی بارگاہ میں ہماری حیثیت بلند کرے گا۔

کہانی 2

. یہودیوں کی مسلمانوں کو آپس میں لڑانے کی سازش،

اس کہانی میں ، ایک یہودی جو درحقیقت منافق تھا  اس نے کچھ مسلمانوں کو کھانے کے لئے مدعو کیا۔ اس ڈنر پارٹی کے دوران ، انہوں نے مسلمانوں کو ایک دوسرے سے لڑانے کرنے کی کوشش کی۔ انہوں نے ان کے پرانے لڑائی جھگڑے اور اس کے بارے میں بات کی جس سے وہ ان کے عداوت کا دور یاد رکھیں گے۔ آخر کار وہ اپنے مشن میں کامیاب ہوگیا۔ دونوں مسلم گروہ پھنس گئے تھے لہذا زخموں کو دوبارہ کھولا گیا ، یادیں تازہ ہوگئیں اور مسلح افراد کی طرف متوجہ ہونا شروع ہوا۔ وہ ایک جگہ کا انتخاب کرتے ہیں اور وہ دوبارہ لڑتے ہیں۔ جب نبی کو یہ معلوم ہوا تو آپ صل اللہ علیہ والہ وسلم نے فرمایا اے لوگو! آپ جاہل تھے۔ اللہ نے آپ کی رہنمائی کی تھی اور آپ کی عزت کی تھی اور آپ کو جہنم کی آگ سے بچایا تھا اور آپ کو دوبارہ ملایا تھا۔ جب آپ یہاں ہوں تو آپ لڑیں گے؟انہیں احساس ہوا کہ وہ پھنسے ہوئے ہیں۔ دونوں اطراف کے لوگوں نے فریاد کی اور معافی کی درخواست کی۔ معافی مانگ لی گئی اور وہ دوبارہ مل گئے۔ اس یہودی کا ڈرامہ ناکام ہوگیا۔

پیارے بچو آپ دیکھ سکتے ہیں کہ کس طرح کچھ لوگ اور شیطان ہمیشہ ہمیں گمراہ کرنے کی کوشش کرتے ہیں اور ہم اپنے بہن بھائیوں اور دوستوں سے بھی لڑنا شروع کردیتے ہیں۔ لیکن ہمیں ہمیشہ یاد رکھنا چاہئے ، ماضی کی یادیں اور برے تجربات ہمارے درمیان کبھی بھی تنازعہ یا لڑائی کا سبب نہیں بنیں۔ خوشی سے زندہ رہو اور سب کو عزت دو۔ کوئی لڑائی ، کوئی دلیل اور کوئی دھونس نہیں۔ یہاں تک کہ اس کو کوئی جواب نہیں جو آپ کو دھونس مارنے کی کوشش کرتا ہے۔

  آخر میں حدیث کی کتاب میں حدیث لکھنا نہ بھولیں۔ اور اس حدیث کے لئے آپ نے جو حدیث اور دوسری سرگرمیاں کی ہیں ان کی تصویر شیئر کریں۔ . اللہ آپ کے لئے آسانیاں پیدا کرے نوٹ: -اس حدیث کو اپنے گھر والوں اور دوستوں کے ساتھ پھیلائیں تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگ اس سے مستفید ہوں۔

This story is written for our 30 short hadith with stories course for kids. You can join this course. We offer online classes in a very reasonable fee. Visit this Link for our courses.

This course is also helping Home schooling mothers in different ways.. You can get all resources from my website to teach your child 30 short hadiths at home. We have videos, written stories, worksheets and a full teaching method. So contact us if you need to get these helpful resources.

You can watch or read this story in English as well in Stories for children section or Search as Hadith no 16 story in English.

This Hadith and story in Video

You can buy an ebook of 35 pages of this course. comment below to know how. Worksheet For this Hadith

(Visited 170 times, 1 visits today)
close

Oh hi there 👋
It’s nice to meet you.

Sign up to receive awesome content in your inbox, every month.

We don’t spam! Read our privacy policy for more info.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *