Taqwa is Fear of Allah: Hadith with story for kids

Taqwa

السلام وعلیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ

میرے پیارے طلباء! آج ہم ایک خوبصورت حدیث اور ایک بہت ہی دلچسپ کہانی سیکھنے جارہے ہیں۔اللہ اسے ہماری طرف سے قبول فرمائے اور اس پر عمل کرنے میں ہماری مدد فرمائے۔ آمین

Hadith about Taqwa: حدیث

اتَّقِ اللَّهِ حَيْثُمَا كُنْتَ

جہاں بھی رہو اللہ سے ڈرو

اللہ الرحمٰن اور الرحیم  یعنی بہت رحم کرنے والا ہے۔اللہ العلیم ہے ، وہ ہر جگہ ہے اور وہ سب کچھ جانتا ہے۔ابوذر نے بیان کیا: اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا ، “اللہ سے ڈرو جہاں بھی ہو ، کسی اچھے کام کے ساتھ برے کام کی پیروی کرو اور وہ اسے مٹا دے گا ، اور لوگوں کے ساتھ اچھے طریقے سے پیش  آو۔”

ماخذ: سنن الترمذی1987

ہمارے نبی محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے ہمیں اللہ سے ڈرنے اور تقویٰ اختیار کرنے کا حکم دیا۔ اللہ سے ڈرنا کیوں ضروری ہے؟

میرے پیارے طلباء ، یہ اس وجہ سے ہے کہ جب شیطان ہمیں برا عمل کرنے کی طرف راغب کرے تو ہمیں یہ یاد رکھنا چاہئے کہ اللہ سبحانہ و تعالی ہمیں دیکھ رہے ہیں۔ یہ یقین رکھتے ہوئے کہ اللہ ہر چیز پر قدرت رکھتا ہے ، ہماری خوبیاں بڑھانے میں ہماری مدد کرے گا۔

میرے پیارے بچوں  یاد رکھیں، ہمارے کندھوں پر فرشتے ہمیشہ ہمارے اچھے اور بُرے کاموں کو لکھتے رہتے ہیں۔ اگر آپ سے کوئی برا فعل ہوتا ہے تو اللہ سے دعا کریں کہ وہ آپ کو معاف کردے کیونکہ وہ الغفار یعنی  سب سے زیادہ      معاف    کرنے   والا  ہے۔

میرے پیارے بچوں ، ہمیشہ اپنے والدین کو اپنے تمام اعمال کے بارے میں بتائیں ، اچھے یا برے ، وہ اس میں آپ کی مدد کریں گے  ۔

Story: حضرت عمر فاروق رضی  اللہ عنہ اور بیوہ عورت

ایک نوجوان لڑکی دودھ بیچ رہی ہے

ایک بہت ہی ایماندار نوجوان لڑکی تھی ، اسے اللہ کا خوف تھا اور ہمیشہ اچھے کام کرنے کی کوشش کرتی تھی۔

انہی دنوں میں ، حضرت عمر فاروق رضی  اللہ عنہ اسی شہر کے خلیفہ تھے جہاں وہ رہتی تھی۔ خلیفہ نے حکم دیا کہ کوئی بھی دودھ میں پانی نہیں ملائے۔

ایک دن اس بچی کی والدہ نے اس سے دودھ میں کچھ پانی ملانے کو کہا تاکہ وہ زیادہ سے زیادہ رقم کمائیں کیونکہ وہ بہت زیادہ غریب تھے ۔

لڑکی نے کہا ، ’’ نہیں ماں ، میں یہ نہیں کروں گی کیونکہ خلیفہ نے ہمیں منع کیا ہے اور ہمیں اس کے حکم کی تعمیل کرنی ہوگی۔

والدہ نے کہا ، “مجھے معلوم ہے لیکن خلیفہ اسے دیکھنے کے لئے یہاں نہیں ہیں۔”

لڑکی نے کہا ، “شاید وہ یہاں نہ ہو لیکن اللہ ہر وقت ہم پر نگاہ رکھتا  ہے ۔”

اسی دوران ، خلیفہ جو شہر میں گشت کر رہے تھے ، اس  عورت کے گھر کے باہر روکے اور ان کی گفتگو سنی۔ حضرت عمر فاروق رضی  اللہ عنہ نے دروازہ کھٹکھٹایا اور گھر میں داخل ہوۓ اور اس نے بچی کی تعریف کی اور بتایا کہ وہ اس لڑ کی  سےکتنے خوش ہیں اور پھر ماں کو اس کی لالچی حرکت پر پچھتاوا ہوا۔

بعد میں ، خلیفہ نے اس لڑکی کے ساتھ اپنے بیٹے عبداللہ بن عمر کی شادی کی اور یہ اس کی ایمانداری اور اللہ کے خوف کا بدلہ تھا۔

اس کہانی سے ہم نے جو سبق حاصل کیا وہ یہ ہے کہ برا عمل برا ہے ، چاہے ہم اسے کھلے عام کر رہے ہو یا خفیہ۔ ہمیں برے کام کرنے میں کسی کی اطاعت نہیں کرنی چاہئے کیونکہ اللہ  ہمارا  رب  ہے اور ہمیں ہمیشہ اللہ سے ڈرنا چاہئے ، ان شاء اللہ

اس حدیث  کو اپنی حدیث کی کتاب میں لکھیں اور اپنے والدین اور دوستوں کے ساتھ بانٹتے رہیں۔

السلام وعلیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ

This story has been written for our Hadith with stories course designed for kids in English and Urdu. We also have prepared worksheets for kids. Visit the following links to read more about the course.

30 short hadith with stories course Introduction

Read This hadith with the introduction and explanation in Urdu and English

Read This story in Urdu

Buy our hadith workbook

Video of this story

Worksheet for This hadith

taqwa
(Visited 588 times, 1 visits today)