Posted on

آج   کی حدیث کا  موضوع نرم دلی ہے  ۔

اس حدیث کا مفہوم ہے کہ  اللہ نرم دل ہے اور وہ نرم دلی کو پسند کرتا ہے ۔ یہ حدیث صحیح مسلم 2593 کی کتاب سے لی گئی ہے ۔

This image has an empty alt attribute; its file name is Hadess.png

پیارے بچوں، نرم دلی اللہ کے اوصاف میں سے ایک صفت ہے. اللہ اپنی مخلوق پر بہت مہربان ہے. اور وہ جانوروں اور کیڑوں کے ساتھ بھی حسن سلوک کرتا ہے۔ اللہ کے نبی محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم سب سے نرم دلیانسان تھے۔ آپ  صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے کبھی کسی کو تکلیف نہیں دی۔ اور ۔ آپ  صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے ہمیں بھی  رحمدلی کا سبق دیا۔ چنانچہ ہم اسلام میں بہت سی کہانیاں دیکھ سکتے ہیں جہاں مسلمان اللہ کی مخلوق کے ساتھ بہت مہربان نظر آیا ہے۔ آج ہم نرم دلی کی ایک بہت آج کی کہانی کا نا م سبکیتیگین کی نرم دلی ہےبڑی کہانی سنیں گے۔

 سبکیتیگن جوانی میں غلام تھا اور بعد میں اس نے اپنے مالک الپتگین کی بیٹی سے شادی کر لی۔ یہ وہ وقت تھا جب وہ غلام تھا۔ ایک بار وہ اپنے مالک کے شکار کے لئے گیا۔ وہ پورے دن شکار ڈھو   نڈتا ہے لیکن شکار نہیں ملتا۔ جب وہ واپس جا رہا تھا تو اسے ایک جھیل کے قریب ایک ہرن کا  بچہ ملا۔ وہ خوش تھا، آخر کار اسے کچھ مل گیا. اس نے دوڑ کر ہرن کے بچے کو پکڑ لیا اور اسے کھینچ لیا ہرن کا  بچہ بہت چھوٹا تھا  اس نے کوئی مزاحمت نہیں کی۔۔۔۔ اس نے ہرن کے بچے کو اپنے گھوڑے کے پیچھے رکھا اور اپنی سواری شروع کی۔

اندھیرا ہونے والا تھا بہت جلد وہ اپنی منزل تک پہنچنے کے لئے تیزی سے سوار ہوا۔ کچھ دیر بعد جب وہ واپس مڑا   تو اس نے ایک ہرنی کو دیکھا۔ اس نے سوچا یہ ہرن کا  بچہ میرے لئے کافی ہے. مجھے ہرنی کا شکار کرنے کی کوشش نہیں کرنی چاہئے۔ اس نے اپنا سفر جاری رکھا۔ کچھ دیر بعد اس نے دیکھا، ہرنی اب بھی اس کے پیچھے آ رہی ہے ۔ وہ  سوچنے لگا   ہرنی اس کی کیوں پیروی کر رہی ہے۔ وہ خود کو خطرے میں کیوں ڈال رہی  ہے۔ وہ مجھ سے کیا چاہتی ہے. وہ اپنی گہری سوچ میں تھا، اس کی نظر ہرنی کی آنکھوں پر  پڑی ۔ اس نے دیکھا کہ ہرنی بہت  فکر مند نظر آ رہی ہے۔ اس کی آنکھیں پریشان، بھری اور اسے دل لجا تی نظر آنے لگ رہی ہیں۔

اس کے دماغ نے فورا ً سوچا کہ کیا یہ ماں ہرن ہے؟ اس نے سوچا. اوہ وہ ہے، ہاں وہ ایک ماں ہی  ہے. صرف ایک ماں ہی خود کو خطرے میں ڈال سکتی ہے۔ میں اتنا ظالم کیسے ہو سکتا ہوں؟ مجھے انہیں الگ نہیں کرنا چاہئے.  اس نے سوچا اور  ہرن کے بچے کو آزاد کر دیا. وہ تیزی سے بھاگا اور اپنی ماں کے پاس پہنچا  ، وہ ایک دوسرے سے مل رہے تھے۔ ماں مہربان تھی اور ہرن کا  بچہ خوش تھا۔ وہ کچھ دیر وہاں رہا اور محبت کے لمحات کو محسوس کیا۔ پھر وہ سوار ہوتا ہے اور اس جذباتی منظر پر آخری نظر دیکھنے کے لئے گھومتا ہے۔ اس کا شکریہ ادا کرنے  کے لیے ہرنی کی آنکھیں. اس کی شکر گزار تھیں. وہ مطمئن تھا کہ ہرنی خوش ہے۔ اس دن اس کے پاس کچھ نہیں تھا، لیکن اسے اس کے حسن سلوک پر بہت اطمینان ملا۔  اس رات جب وہ سوتا ہے تو اس نے ایک خواب دیکھا ۔ وہ ہرن اس سے کہہ رہا تھا کہ ”تم ایک نیک آدمی ہو، ایک دن تم بادشاہ بنو گے۔

کئی سال بعد اس کا خواب پورا ہوا۔ اور وہ کچھ سالوں کے بعد غنسی کا بادشاہ بن گیا۔ اس کی نیکیاں اور شفقتیں اس طرح اس کی طرف لوٹ آئیں۔ 

میرے پیارے بچوں ، ہمیں بھی ہمیشہ ہر ایک کو خوش اورمطمئن رکھنا چاہیے – ہر ایک کے ساتھ رحمدل ہونا چاہئے۔

  اب آپ کو اس حدیث کو اپنی کتاب میں لکھنا چاہیے اور اسے اچھی طرح سیکھنا چاہیے.

This hadith and story in a video

Kids activity after learning tis story

(Visited 129 times, 1 visits today)
close

Oh hi there 👋
It’s nice to meet you.

Sign up to receive awesome content in your inbox, every month.

We don’t spam! Read our privacy policy for more info.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *